Home / Male sexual disorders / جریان یعنی دھات کا گرنا کیا ہے؟ اسباب اور علاج

جریان یعنی دھات کا گرنا کیا ہے؟ اسباب اور علاج

جریان یعنی دھات کا گرنا کیا ہے؟ اسباب اور علاج

جریان سے مراد ہے کے مباشرت کے یا جلق کے بغیر ہی جاگنے کی حالت میں منی خارج جو کسی بھی وقت کھڑے بیٹھے پھرتے یا پیشاب یا پاخانہ کرتے وقت نکل سکتی ہے

اسباب

اس مرض کے اسباب اطباء کے قریب مختلف ہیں بعض کے نزدیک مزاج میں حدت بڑھ جانے سے منی کا رقیق ہونا ہے جس کی علامت منی کا زرد یا زردی مائل ہونا ہے . ایسی حالت میں اخراج منی کے وقت اور پیشاب کرتے وقت قدرے سوزش محسوس ہوتی ہے.کسی کے نزدیک اسکا سبب منی کا کثرت سے پیدا ہونا ہےاور محل استعمال نہ ہونے سے طبیعت اس کو رفع کرنے پر مجبور ہو جاتی ہے. بعض کے نزدیک ایک مزاج میں رطوبت اور برودت کا غلبہ ہوتا ہے کہ جس کی وجہ سے منی میں کود کر نکلنے کی طاقت کم ہو کر بغیر خواہش بہہ جاتی ہےاور اس حالت میں کی کوئی لذت محسوس نہیں‌ہوتی اور بعض کی رائے میں‌ آجکل اس مرض کی زیادتی گندے خیالات اور آوارگی کا نتجیہ ہے چونکہ بے پردگی عام ہو گئی ہے”شرم و حیا اٹھ گئی ہے” نوجوان غیر شادی شدہ لڑکیاں بھی پورے بناو سنگھار کے ساتھ برہنہ دلکش لباس پہن کر بہترین خوشبو لگا کر آپس میں‌اٹکھیلیاں‌کرتی ہوئی سڑکوں اور گلی کوچوں سے گزرتی ہیں تو ان کی مستی نواز شوخی گلی کے نکڑپر کھڑے ہوےزندہ دل نوجوان کے دل و دماغ کو اس حد تک متاثر کرتی ہے کہ رات کوعالمِ خواب میں ان مناظر سے لطف اندوز ہوتے رہتے ہیں پڑھتے وقت کتاب کے صفحات پر ان کی شکلیں نظر آتی ہیں یہ برمی عادت ان کے تناسل اعضاء کی حس بڑھا دیتی ہے. احتلام بھی جلد جلد ہونے لگتے ہیں اور یوں زرا سی اکساہٹ پر منی خارج ہونے لگتی ہے یہ مرض طالب علموں میں زیادہ پایا جاتا ہےاس کے بالمقابل وہ بچے جن کو ان کے والداین نے مجبوری کے تحت 10-12 سال کی عمر میں کسی پرائیوٹ کارخانہ ورک شاپ یا کسی مکینک کے ہاں‌ملازم کرا دیتے ہیں اور صبح‌سے شام تک میلے کچیلے کپڑے پہنے کام میں جتے رہتے ہیں اور شام کو گھر جا کر کھانا کھا کر سو جاتے ہیں اور انہی لیل و نہار میں‌وہ بالغ ہو جاتے ہیں وہ اس قسم کی بیماریوں‌سے محفوظ رہتے ہیں شرمیلے مزاج کے نوجوان جو عورتوں کو گھورنے کی ہمت نہیں رکھتے مگر گندے فحش ناول و افسانے پڑھ کر جنسی ہیجان میں مبتلا رہتے ہیں اور ان میں‌بھی یہ مرض پیدا ہو جاتا ہے

اصول علاج

مریض کے حالات کا جائزہ لے کر سبب مرض ترک کرنے کہ کہا جائے . اگر مریض مسلمان ہے تو نا محرموں کو گھورنے کو آنکھوں میں‌زنا بتا کر اس سے نفرت دلائی جائے ، توبہ استغفار کرنے کو کہا جائے اور ذکاوت حس دور کرنے کی دعائیں استعال کرائی جائیں

اس مرض کاعلاج

اگر یہ عارضہ کثرت سے جریان کثرت منی کی وجہ سے ہو جس کی علامت یہ ہے کہ بدن میں خون زیادہ ہوگا مریض مولدِ خون و مولدِ منی استعمال کرتا ہوگا اور محنت نا کرتا ہوگا . اس کو اخراجِ منی سے کوئی کمزوری محسوس نہ ہوتی ہوگی اس کا علاج یہ ہے کہ مولد منی ترک کر دے اگر غر شادی شدہ ہے تو شادی کرلے تخم کا ہواجوائن خراسانی ہر ایک 3 ماشہ کشنیز خشک(دھنیا) 6 ماشہ ان سب کو پانی میں پیس کر شیرہ نکال کر 3 تولا شربت نیلوفر میں ملا کر صبح شام پیئے.گرم غذاوں سے پرہیز کرے. یاہمارے دواخانے کا جریان کورس استعمال کریں، بفضلِ خدا شفا ہوگی